قومی ایوارڈ یافتہ سینئر صحافی و ماہر افغان امور رحیم اللہ یوسفزئی کی زندگی پر ایک نظر

0
17

پشاور: سینئر صحافی رحیم اللہ خان یوسف زئی انتقال کرگئے۔ سینئر تجزیہ کار اور افغان امور کے ماہر رحیم اللہ یوسفزئی انتقال کرگئے مرحوم کئی ماہ سے علیل تھے۔

رحیم اللہ یوسفزئی 10 ستمبر 1954 کو پیدا ہوئے انہیں القاعدہ کےسربراہ اسامہ بن لادن کے انٹرویو کی وجہ سے کافی شہرت ملی۔ رحیم اللہ یوسفزئی ان چند صحافیوں میں سے ہیں جنہوں نے طالبان کے کارروائیوں کو رپورٹ کیا اور 1995ء میں خود قندھار گئے۔

رحیم اللہ روزنامہ جنگ کے لیے بطور کالم نگار کام کرتے رہے ،اس سے پہلے ٹائم میگزین کے لیے بھی کام کیا بی بی سی اردو اور بی بی سی پشتو کے نمائندہ بھی رہے۔ افغانستان اور شمال مغربی پاکستان کے امور کے ماہر سمجھے جاتے ہیں۔  ان کے صحافتی خدمات کے اعتراف میں حکومت پاکستان نے ان کو 2004 میں تمغہ امتیاز اور 2009 میں ستارہ امتیاز سے نوازا ہے۔

پشاور مرحوم کا نماز جنازہ کل گیارہ بجے مردان کاٹلنگ انذرگئ نزد سوات ایکسپریس وے کاٹلنگ انٹرچینج کے قریب خان ضمیر بانڈہ میں ادا کی جائے گی۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں