آزاد کشمیر کے علاقے باغ میں محنت کش پر قاتلانہ حملہ، ملزم تاحال گرفتار نہ کیا جاسکا

0
14

مظفرآباد: ‎آزاد کشمیر کے ضلع باغ کے گائوں چوکی ایوب آباد میں 10 جنوری کو رنگ و روغن کا کام کرنے والے محنت کش محمد شفیق کو گھر میں کام کے بہانے بُلانے والے ارشاد ولد محمد ایوب نے چھریوں کے وار سے قاتلانہ حملہ کرکے شدید زخمی کردیا۔

حملے میں محمد شفیق نے چھریوں کے وار سے زخمی حالت میں خود کو بچتا بچاتا گھر سے باہر بھاگنے کی کوشش کی لیکن ارشاد نے پیچھے سے پے در پے چھریوں کے وار سے شدید زخمی کردیا۔ تاہم محمد شفیق نے جان بچاتے ہوئے گھر سے باہر نکلتے ہی رشتے داروں کو کال کردی۔ جسے رشتے داروں نے شدید زخمی حالت میں اسپتال پہنچایا جہاں پر محمد شفیق کے پیٹ اور سر میں چاقو لگنے سے خون بہہ گیا۔

محمد شفیق کی جانب سے ملزم ارشاد کے خلاف تھانہ آرام باغ میں ایف آئی آر درج کروائی جاچکی ہے۔ تاہم پانچ روز گزرنے کے بعد گرفتاری عمل میں نہ لائی جاسکی۔

محمد شفیق کے اہل خانہ نے وزیر اعلی آزاد کشمیر اور آئی جی پولیس سے مطالبہ کیا ہے کہ ارشاد نامی سفاک شخص کو گرفتار کیا جائے اور حملے کے محرکات معلوم کیے جائیں۔ اس نے ایسا کیوں کیا اور یہ کتنے لوگوں کے ساتھ ایسا کرچکا ہے۔

واضح رہے کہ باغ میں اس طرح کے قاتلانہ حملے کے بعد خوف ہراس پھیل گیا ہے۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں