روزنامہ جنگ، دی نیوز اور جاوید پریس میں تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے خلاف صحافی مزدور ایکشن کمیٹی کا احتجاجی مظاہرہ

0
10

کراچی: روزنامہ جنگ، دی نیوز اور جاوید پریس میں تنخواہوں کی عدم ادائیگی، میڈیکل کی سہولتوں کی عدم فراہمی اور بونس بند کیے جانے کے خلاف کراچی میں صحافی مزدور ایکشن کمیٹی کے تحت جنگ بلڈنگ کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، جس میں کراچی کے صحافیوں اور مزدوروں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

مظاہرین نے اس موقع پر اپنے ہاتھوں میں مختلف بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر ان کے مطالبات کے حق میں نعرے درج تھے مظاہرین نے اس موقع پر جنگ انتظامیہ کیخلاف زبردست نعرے بازی کی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے صحافی و مزدور رہنماوں کا کہنا تھا کہ ایک ارب روپے سے زیادہ ماہانہ کمانے والے ادارے جنگ گروپ کا اپنے ملازمین کو تنخواہوں اور دیگر مراعات سے محروم رکھنا ناصرف لیبر قوانین بلکہ انسانی حقوق کی بھی خلاف ورزی ہے ملک میں آزادی اظہار رائے، آزادی صحافت اور جمہوریت کی بالادستی کی بات کرنے والے اس ادارے کا یہ رویہ اس کی دہری پالیسی کی عکاسی کرتا ہے۔ جنگ گروپ میں ملازمین کو ناصرف تنخواہیں وقت پر ملنی چاہئیں بلکہ میڈیکل کی سہولتیں اور بونس بھی ان کا حق ہے صحافی اور مزدور رہنماوں نے اس موقع پر جنگ، دی نیوز اور جاوید پریس کے ملازمین کو یقین دلایا کہ کراچی کی صحافی برادری اور مختلف شعبوں کے مزدور اپنے اخباری کارکن ساتھیوں کے ساتھ ہیں اور ان کے کاندھے سے کاندھا ملا کر ان کے حق کے لیے آواز اٹھاتے رہیں گے۔

صحافی مزدور ایکشن کمیٹی کا کہنا تھا کہ یہ ٹوکن احتجاج تھا اگر جنگ گروپ کی انتظامیہ کے رویے میں کوئی تبدیلی نہیں آئی تو احتجاج کا دائرہ مزید وسیع کردیا جائے گا، مظاہرے سے پائلر کے کرامت علی، پی ایف یو جے کے سابق سیکریٹری جنرل مظہر عباس، ایپنک کے عبیداللہ، کراچی یونین آف جرنلسٹس کے جنرل سیکریٹری فہیم صدیقی، ہوم بیسڈ وومن ورکرز فیڈریشن کی جنرل سیکریٹری زہرہ خان، اسٹیل مل کے مزدور رہنما اور دیگر نے خطاب کیا۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں