سندھ بھر میں 22 اپریل سے عملی طور پر تعلیمی عمل بحال ہوگا، وزیر تعلیم سعید غنی

0
15

کراچی: وزیر تعلیم سعید غنی کا کہنا ہے کہ محکمہ تعلیم سندھ نے پہلے ہی اعلان کردیا تھا کہ یکم سے آٹھویں جماعت تک میں عملی طور پر تدریسی عمل معطل کر دیا گیا ہے اور 22 اپریل سے سندھ بھر میں عملی طور پر تعلیمی عمل بحال ہوگا۔ اگر خدانخواستہ صوبے کے کسی اضلاع میں کرونا وائرس کے کیسز میں اضافہ ہوتا ہے تو وہاں کی ضلعی انتظامیہ اس اضلاع کے حوالے سے فیصلہ کرسکتی ہے اور الحمدللہ اس وقت صوبے میں کورونا وائرس کی صورتحال کنٹرول میں ہے۔

سعید غنی نے کہا کہ اس وقت سندھ میں کوئی مخصوص ضلع متاثر نہیں ہے اور سندھ کے تعلیمی اداروں میں مثبت کیسز کی شرح 2.6 فیصد ہے۔ نویں سے بارہویں جماعت تک کا تعلیمی عمل بلا تعطل جاری رہے گا اور نویں جماعت سے بارہویں جماعت کے امتحانات شیڈول کے مطابق ہونگے۔ بغیر امتحانات کے کسی کو پروموٹ نہیں کیا جائے گا۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں