فحش بینی کرنے والے ٹاپ 20 ممالک میں کوئی مسلمان ملک شامل نہیں، 2021 میں پاکستانی کیا دیکھتے رہے، ڈیٹا جاری

0
38

نیو یارک: فحش بینی کرنے والے ٹاپ 20 ممالک میں کوئی مسلمان ملک شامل نہیں، 2021 میں پاکستانی کیا دیکھتے رہے؟ سب سے بڑی ویب سائٹ نے ڈیٹا جاری کردیا۔

فحش فلموں کی سب سے بڑی ویب سائٹ نے سنہ 2021 کے اعداد و شمار جاری کردیے ہیں جس کے مطابق فحش بینی کرنے والے ٹاپ 20 ممالک میں کوئی مسلمان ملک شامل نہیں ہے۔

ویب سائٹ کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق سب سے زیادہ فحش بینی امریکہ کے لوگوں نے کی جس کے بعد برطانیہ، جاپان، فرانس، اٹلی، میکسیکو، کینیڈا، جرمنی اور فلپائن کا نمبر آتا ہے۔ برازیل، سپین، آسٹریلیا، پولینڈ، یوکرائن، نیدر لینڈز، ارجنٹینا، کولمبیا، روس، سویڈن اور چلی بالترتیب سب سے زیادہ فحش بینی کرنے والے ٹاپ 20 ممالک میں شامل ہیں۔

فحش بینی کرنے والے ٹاپ 20 ممالک میں کوئی مسلمان ملک شامل نہیں، 2021 میں پاکستانی کیا دیکھتے رہے، ڈیٹا جاری
Sex Web

سنہ 2021 کے دوران اس ویب سائٹ پر سب سے زیادہ جاپانی فحش فلمیں دیکھی گئیں جبکہ خواتین کی ہم جنس پرستی پر مشتمل مواد دوسرے نمبر پر رہا۔ جاپانی فحش فلمیں پورے ایشیا میں سب سے زیادہ دیکھی گئیں جب کہ پاکستان اور انڈیا میں سب سے زیادہ لوگوں نے انڈین فحش فلمیں دیکھیں۔ عرب ملک مصر کے صارفین نے ‘عرب’ کیٹگری کو سب سے زیادہ دیکھا۔

خیال رہے کہ یہ ویب سائٹ گزشتہ آٹھ سالوں سے اپنے ڈیٹا کا تجزیہ پیش کرتی آ رہی ہے۔ رواں سال کئی صفحات پر مشتمل رپورٹ جاری کی گئی ہے جس میں پاکستان اور مصر کا نام صرف حوالے کے طور پر شامل کیا گیا ہے نیز کسی مسلمان ملک کا نام پوری رپورٹ میں شامل نہیں ہے۔ پاکستان کا نام انڈیا کے ساتھ ایک ہی ریجن میں ہونے کی وجہ سے شامل ہوا جب کہ مصر کا نام عرب کیٹگری کی وجہ سے رپورٹ میں آیا تاہم دونوں ملکوں کے ایسے کوئی اعداد و شمار رپورٹ میں شامل نہیں ہیں کہ یہاں کتنے لوگوں نے یا کتنے گھنٹے فحش بینی کی گئی۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں