تحریک انصاف کے رہنما اعظم سواتی نے ضمانت بعداز گرفتاری کیلئے عدالت سے رجوع کر لیا

0
19

اسلام آباد: متنازع ٹوئٹس کیس میں سینیٹر اعظم سواتی نے ضمانت بعداز گرفتاری کے لیے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کر لیا۔

اعظم سواتی نے بابر اعوان کے ذریعے دائر درخواست میں مؤقف اپنایا ہے کہ مبینہ ٹوئٹس پوسٹ نہیں کیں۔

درخواست میں کہا گیا کہ اعظم سواتی کا کسی ادارے کو بدنام کرنے کا بھی کوئی ارادہ نہیں تھا، تفتیش مکمل ہونے کے بعد بھی پراسیکیوشن کے پاس ان کے خلاف ثبوت نہیں۔

تحریری فیصلہ میں اعظم سواتی کو کم از کم 7 سال اور زیادہ سے زیادہ عمر قید کی سزا ہو سکتی ہے۔

اعظم سواتی کی درخواست میں یہ بھی کہا گیا کہ پٹیشنر کی عمر 75 سال اور عارضہ قلب میں مبتلا ہے، تمام کیس دستاویزی الزامات پر مبنی ہے، جیل میں رکھنا ٹرائل سے قبل سزا کے مترادف ہو گا۔

واضح رہے کہ ٹرائل کورٹ نے 21 دسمبر کو اعظم سواتی کی درخواست ضمانت مسترد کردی تھی۔ متنازع ٹوئٹس پر ایف آئی اے نے اعظم سواتی کے خلاف 26 نومبر 2022 کو مقدمہ درج کیا تھا۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں